بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

29 صفر 1444ھ 26 ستمبر 2022 ء

دارالافتاء

 

آپنے آپ کو ہندو کہنے کا حکم


سوال

اگر کوئی مسلمان اپنے آپ کو جان کر یا مذاق میں ہندو کہتا ہے تو کیا وہ شرعی حکم کے مطابق کافر ہو جائے گا۔

جواب

صورت مسئولہ میں کسی مسلمان کو اس طرح کے جملے ہر گز نہیں بولنے چاہیے ،بہت خطرناک الفاظ ہیں،اگر چہ کہنے والے کا اعتقاد اس سے ہندو ہونے  کا نہ بھی ہو تو  بھی زبان سے اقرار کرنے کی وجہ سے دائرہ اسلام سے خارج ہوجائے گا اور اس پر تجدید ایمان کے ساتھ ساتھ شادی شدہ ہونے کی صورت میں تجدید نکاح کرنا بھی لازم ہوگا۔

فتاوی عالمگیریہ میں ہے:

"مسلم قال: ‌أنا ‌ملحد يكفر، ولو قال: ما علمت أنه كفر لا يعذر بهذا."

(کتاب السیر ،باب احکام المرتدین،ج:2،ص:279،ط:رشیدیہ)

فقط واللہ اعلم


فتوی نمبر : 144308100788

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاش

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے نیچے کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔ سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے۔

سوال پوچھیں