بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

5 ربیع الاول 1444ھ 02 اکتوبر 2022 ء

دارالافتاء

 

انبیائے کرام کی تعداد


سوال

یہ جو پیغمبروں کی تعداد ایک لاکھ چوبیس ہزار بتائی  جاتی ہے ، اس کا حوالہ کیا ہے ؟

جواب

واضح رہے کہ دنیا میں کم وبیش ایک لاکھ چوبیس ہزار انبیائے کرام تشریف لائیں ،جس میں رسولوں کی تعداد تقریباً تین سو پندرہ تھی ۔

مشکاۃ المصابیح میں ہے :

"وعن أبي ذر قال: قلت: يا رسول الله أي الأنبياء كان أول؟ قال: «آدم» . قلت: يا رسول الله ونبي كان؟ قال: «نعم نبي مكلم» . قلت: يا رسول الله كم المرسلون؟ قال: «ثلاثمائة وبضع عشر جما غفيرا

وفي رواية عن أبي أمامة قال أبو ذر: قلت يا رسول الله كم وفاء عدة الأنبياء؟ قال: «مائة ألف وأربعة وعشرون ألفا الرسل من ذلك ثلاثمائة وخمسة عشر جما غفيرا."

(باب بدء الخلق وذکر الانبیاء،ج:3،ص:1599،المکتب الاسلامی)

فقط واللہ اعلم


فتوی نمبر : 144402100597

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاش

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے نیچے کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔ سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے۔

سوال پوچھیں