بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

18 ربیع الاول 1443ھ 25 اکتوبر 2021 ء

دارالافتاء

 

انابیہ نام رکھنے کا حکم


سوال

انابیہ نام رکھ سکتے ہیں یا نہیں؟  اور اس  کے معنی کیا ہیں؟

جواب

”اَنَابِیَّه“ ”اَناب“ (ہمزہ کے فتحہ کے ساتھ )سے اسم منسوب موٴنث ہے جس کے معنی ہیں مشک، یا مشک کی  مانند ایک خاص قسم کی خوشبو۔

ففي المعجم الوسیط: "الأناب: المسك أو عطر یشبهه."

(ص۲۸،الأنب، ط: دیوبند. وکذا فی القاموس الوحید،ص: ۱۳۷، ط: دار اشاعت)

لہٰذا صورتِ مسئولہ میں ”انابیہ“ نام رکھنا درست ہے۔فقط  واللہ اعلم


فتوی نمبر : 144203200593

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاش

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے نیچے کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔ سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے۔

سوال پوچھیں