بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

- 20 جنوری 2021 ء

دارالافتاء

 

ایک لاکھ میں سے 50 ہزار قرض ہو تو زکاۃ کا حکم


سوال

میرے پاس لاکھ روپے ہیں، مجھ پر شخصی قرضہ پچاس ہزار کاہے، زکاۃ نکالتے وقت لاکھ روپیوں کی یا پچاس ہزار کی زکاۃ نکالنی پڑے گی؟

جواب

صورتِ مسئولہ میں پچاس ہزار روپے قرض کو کل مالیت سے منہا کرکے زکاۃ کا حساب کیا جائے گا، اگر آپ کے پاس صرف 50 ہزار روپے ہی باقی بچتے ہیں تو اس پر زکاۃ واجب نہیں ہوگی، کیوں کہ یہ رقم نصابِ زکاۃ کے برابر نہیں ہے، آج (31 اکتوبر 2020ء) کے حساب سےساڑھے باون تولہ چاندی کی قیمت 74,707.5 (چوہتر ہزار، سات سو سات روپے، پانچ پیسے) ہے۔

الدر المختار وحاشية ابن عابدين (رد المحتار) (2 / 260):

"(فارغ عن دين له مطالب من جهة العباد)".

فقط و اللہ اعلم
 


فتوی نمبر : 144110201615

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاش

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے نیچے کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔ سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے۔

سوال پوچھیں