بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

18 ربیع الاول 1443ھ 25 اکتوبر 2021 ء

دارالافتاء

 

ان اللہ و ملئکتہ یصلون علی النبی والی آیت فرض نماز کے بعد دعا میں پڑھنا


سوال

{ان اللّٰهَ و ملائكته یصلون على النبی} والی آیت فرض نماز کے بعد دعا میں پڑھنا کیا ضروری ہے؟

جواب

رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم پر درود شریف پڑھنا نہایت محبوب اور نیک عمل ہے،  اس کا حکم خود اللہ تعالیٰ نے قرآنِ مجید میں فرمایا ہے؛   لہذا اگر کوئی شخص التزام اور کسی خاص اجتماعی ہیئت کے بغیر  نماز کے بعد درود شریف پڑھتا ہے اور اس میں یہ آیت بھی پڑھتا ہے تو بلا شبہ اچھا عمل ہے، لیکن نہ تو اس کو لازم سمجھا جائے اور نہ اس کی کوئی خاص اجتماعی ہیئت بنائی جائے، نیز اس طرح جہری طور پر بھی نہ پڑھا جائے جس کی وجہ سے نمازیوں کی نماز میں خلل واقع ہو۔

مختصر یہ کہ سوال میں مذکورہ آیت نماز کے بعد پڑھنا ضروری نہیں ہے، اور باجماعت جہرًا اس کا اہتمام ثابت نہیں ہے۔ فقط واللہ اعلم


فتوی نمبر : 144112200905

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاش

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے نیچے کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔ سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے۔

سوال پوچھیں