بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

8 صفر 1442ھ- 26 ستمبر 2020 ء

دارالافتاء

 

5 سال کی قسطوں پر لیے پلاٹ کی زکاۃ


سوال

میں نے  انویسٹمنٹ کی نیت سے ایک پلاٹ کی بکنگ کروائی ہے 23 لاکھ کی۔ میرا زکاۃ کا سال پہلی رمضان پر مکمل ہوتا ہے۔ پلاٹ میں نے جنوری 2020 میں لیا ہے اور 3 لاکھ 50 ہزار روپے ادا کرچکا ہوں۔ آئندہ 5 سالوں کی انسٹال منٹ ہے۔ اس سال کی اور آئندہ سالوں کی زکاۃ کیسے ادا کروں گا؟

جواب

صورتِ  مسئولہ میں مذکورہ پلاٹ کی قیمتِ فروخت کو آپ مالِ تجارت میں شمار کرکے اپنے دیگر اموالِ زکاۃ مثلاً نقدی کے ساتھ ملائیں گے اور اس سال زکاۃ کا سال مکمل ہونے کی تاریخ تک  جو ادائیگیاں آپ کے ذمہ ہوں گی، انہیں آپ اپنے اموالِ زکاۃ (نقدی، مالِ تجارت وغیرہ) سے منہا کرکے بقیہ مالیت کی زکاۃ ادا کریں گے۔ آئندہ  زکاۃ کا سال جب پورا ہوگا، اس سال کی واجب الادا قسطیں زکاۃ سے منہا ہوں گی۔ فقط واللہ اعلم


فتوی نمبر : 144108201423

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاش

کتب و ابواب

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے نیچے کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔ سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے۔

سوال پوچھیں