بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

3 ربیع الاول 1442ھ- 21 اکتوبر 2020 ء

دارالافتاء

 

ہیٹ اسٹروک کی حالت میں روزہ توڑنے کا حکم


سوال

کیا '' ہیٹ اسٹروک''  کی حالت میں روزہ توڑنا جائز ہے؟

جواب

روزہ توڑنے کے جواز یا نہ توڑنے کے حکم کا مدار دراصل گرمی کی شدت اور ہرشخص کی اپنی کیفیت پر ہے، لہٰذا اگر ''ہیٹ اسٹروک'' میں ایسی ناقابلِ برداشت کیفیت ہوجائے کہ روزہ نہ توڑنے کی صورت میں جان جانے کا یا مرض بڑھ جانے کاخطرہ ہو تو روزہ توڑسکتے ہیں، بعد میں اس کی قضا کرنی ہوگی، اور جس شخص کی کیفیت ایسی نہ ہو تو صرف ہیٹ اسٹروک کی وجہ سے روزہ توڑنے یا چھوڑنے کی اجازت نہیں ہوگی۔فقط واللہ اعلم


فتوی نمبر : 143909200127

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاش

کتب و ابواب

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے نیچے کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔ سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے۔

سوال پوچھیں