بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

13 شعبان 1441ھ- 07 اپریل 2020 ء

دارالافتاء

 

ہم بستری کے بعد میاں بیوی کا ایک ساتھ سونا


سوال

ایک بڑی عمر کے شخص کا کہنا ہے کہ ہم بستری کے بعد میاں بیوں کا ساتھ یا ایک ہی جگہ لیٹنا درست نہیں ہے۔ یہی وجہ ہے کہ بچے بھی نہیں ہوتے۔ اس کی شرعی حیثیت کے بارے میں بتا دیں, کیوں کہ میرے بچے نہیں ہیں اور یہ سن کر مزید پریشانی ہو گئی ہے۔

جواب

مذکورہ شخص کی بات کی شرعی لحاظ سے کوئی حیثیت نہیں ، ہم بستری کے بعد میاں بیوی کا ایک ہی جگہ  ایک ساتھ لیٹنا شرعاً جائز ہے،  اس میں کوئی کراہت نہیں،  نیز اولاد نہ ہونے سے بھی اس کا کوئی تعلق نہیں ہے ۔ فقط واللہ اعلم


فتوی نمبر : 144012201750

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاشں

کتب و ابواب

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے نیچے کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔ سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے۔

سوال پوچھیں

ہماری ایپلی کیشن ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے