بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

- 20 نومبر 2019 ء

دارالافتاء

 

چھ یا سات مرتبہ بیوی کو ’’میں تجھ کو فارغ کرتاہوں‘‘ کہنے کا حکم


سوال

میں تجھ کو فارغ کرتاہوں۔بیوی کو یہ الفاظ 6 ۔7 بار کہیں ہیں کیا حکم ہے؟بیوی حاملہ ہے!

جواب

اگر شوہر نے طلاق کی نیت سے یا مذاکرہ طلاق کے وقت  بیوی کو یہ الفاظ ’’ میں تجھ کو فارغ کرتاہوں‘‘  چھ یا سات مرتبہ کہے ہیں تو اس سے اس کی بیوی پر ایک طلاقِ بائن واقع ہو گئی ہے، اگر دونوں ساتھ رہنا چاہتے ہیں تو اس کے لیے باہمی رضامندی سے دو گواہوں کی موجودگی میں نئے مہر کے ساتھ نئے سرے سے نکاح کرنا پڑے گا، البتہ  دوبارہ نکاح کرنے کی صورت میں آئندہ کے لیے شوہر کے پاس صرف دو طلاقوں کا اختیار ہوگا۔ فقط واللہ اعلم


فتوی نمبر : 144008201725

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاشں

کتب و ابواب

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے یہاں کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے

سوال پوچھیں

ہماری ایپلی کیشن ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے