بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

24 جمادى الاخرى 1441ھ- 19 فروری 2020 ء

دارالافتاء

 

چھت ڈلوانے کے لیے رقم ہو تو قربانی کے واجب ہونے کا حکم


سوال

 اگر کسی خاتون نے اپنے بھائی سے بقرعید سے کچھ وقت قبل دو لاکھ روپے اپنے گھر کی چھت ڈالنے کی وجہ سے لیے ہوں تو کیا اس پر قربانی واجب ہوگی؟جب کہ اس کے شوہر کی آمدنی سے کچھ بھی نہیں بچتا!

جواب

اگر بھائی نے یہ رقم ھدیۃً دی ہے اور قربانی کے ایام میں یہ رقم اس عورت کے پاس موجود ہو استعمال نہ ہوئی تو اس عورت پرایک حصہ قربانی کرناواجب ہوگا،شوہر کی آمدنی میں سے کچھ نہ بچتا ہو تو اسی موجود رقم میں سے ایک حصہ قربانی کرے۔ فقط واللہ اعلم


فتوی نمبر : 143909201993

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاشں

کتب و ابواب

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے یہاں کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔ سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے

سوال پوچھیں

ہماری ایپلی کیشن ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے