بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

5 شوال 1441ھ- 28 مئی 2020 ء

دارالافتاء

 

چچا زاد کے بیٹے سے نکاح


سوال

کیا عورت اپنے چچا کی اولادکی اولاد سے شادی کر سکتی ہے؟ اور اپنے تایا کی اولاد کی اولاد سے؟ رشتے کی وہ خالہ بنتی ہے۔

جواب

عورت اپنے چچا زاد یا تایا زاد بھائی یا بہن کے بیٹوں سے نکاح کرسکتی ہے، رشتے کی خالہ سے مراد اگر یہی ہے کہ اپنی تایا زاد بہن کے بیٹے سے نکاح کررہی ہے اور یوں وہ لڑکی کی ماں کی چچا زاد ہونے کی وجہ سے عرف میں بہن سمجھی جاتی ہے، اور اس لڑکے کے لیے عرفاً وہ خالہ کہلاتی ہے، تو اس سے حرمت ثابت نہیں ہوتی۔

لیکن اگر کسی واسطہ سے یہ اس لڑکے کی خالہ ہے، یعنی اس کی ماں کی بہن ہے، مثلاً: رضاعی بہنیں ہیں تو ان سے نکاح جائز نہیں ہے۔ فقط واللہ اعلم


فتوی نمبر : 144104200132

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاش

کتب و ابواب

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے نیچے کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔ سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے۔

سوال پوچھیں

ہماری ایپلی کیشن ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے