بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

18 ذو القعدة 1441ھ- 10 جولائی 2020 ء

دارالافتاء

 

پرائز بانڈ خرید کر قرعہ اندازی کے وقت مہنگا بیچ کر نفع کمانے کا حکم


سوال

پرائز بانڈ اصل قیمت پر خریدنے کے بعد قرعہ اندازی کے وقت کچھ مہنگا  بیچنا جائز ہے یا نہیں ؟

جواب

پرائز بانڈ کی اسکیم چوں کہ سود اور قمار (جوئے) کا مجموعہ ہے، اس لیے پرائز بانڈ خریدنا ہی جائز نہیں ہے، جب کہ اسے خریدکر اس سے نفع کمانا بدرجہ اولی جائز نہیں ہے، چاہے نفع انعام کی صورت میں حاصل کیا جائے یا مہنگا بیچ کر نفع حاصل کیا جائے، دونوں صورتیں جائز نہیں ہیں۔ فقط واللہ اعلم


فتوی نمبر : 144106201129

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاش

کتب و ابواب

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے نیچے کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔ سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے۔

سوال پوچھیں