بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

- 19 نومبر 2019 ء

دارالافتاء

 

ٹائنز کمپنی کے ساتھ معاملات کا حکم


سوال

ٹائنز کمپنی کے ساتھ کام کرنا جائز ہے یا نہیں؟ 

جواب

’’ٹائنز انٹرنیشنل کمپنی‘‘  کی ممبر شپ حاصل کرنایااس میں کام کرنادرست نہیں ہے، اس بارے میں ہمارے  دارالافتاء سے تفصیلی فتوی  مورخہ5/11/2014ءکو شائع ہوچکاہے۔عدمِ  ِجواز کی وجوہات مختصراً درج ذیل ہیں:

۱۔ٹائنزانٹرنیشنل نے اپنی مصنوعات کی تشہیرکے لیے نیٹ ورک مارکیٹنگ کاطریقہ اختیاکیاہے، ٹائنزکاممبربننے کے لیے اولاً  مخصوص رقم اداکرکے اس کی مصنوعات میں سے کوئی چیزخریدنی پڑتی ہے جس کے بغیرکوئی ممبرنہیں بن سکتا،یہ شرط شرعی اعتبارسے درست نہیں اورعقد اجارہ کے خلاف ہے۔

۲۔ ٹائنزکے کاروبار کی روح کمیشن اوررعایتیں دیناہے اوراسی بنیادپرلوگ اس کے ممبربنتے ہیں، گویاکمیشن کومستقل تجارتی شکل دے رکھی ہے، جب کہ اسلامی معیشت میں کمیشن کومستقل تجارتی حیثیت کہیں حاصل نہیں ۔فقط واللہ اعلم


فتوی نمبر : 144102200352

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاشں

کتب و ابواب

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے یہاں کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے

سوال پوچھیں

ہماری ایپلی کیشن ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے