بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

- 18 نومبر 2019 ء

دارالافتاء

 

نیازِ معصومین کا کھانا


سوال

حالتِ نفاس یا استحاضہ میں عورت نیازِ معصومین کھا سکتی ہے؟ بے شک خود ہاتھ نہ لگاۓ کسی اور کے ہاتھ سے کھا سکتی ہے؟

جواب

غیر اللہ کے نام پر بنائے گئے کھانے کا کھانا شرعاً جائز نہیں ہے، لہذا نیازِ معصومین کا کھانا ناجائز اور حرام ہے، مزید یہ ہے یہ روافض کا شعار ہے اس کے بنانے یا اس کے کھانے سے بہر صورت اجتناب ضروری ہے، اس میں حیض، نفاس یا استحاضہ والی عورت کی کوئی تخصیص نہیں ہے بلکہ اس کا کھانا کسی کے لیےبھی جائز نہیں ہے۔فقط واللہ اعلم


فتوی نمبر : 144001200170

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاشں

کتب و ابواب

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے یہاں کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے

سوال پوچھیں

ہماری ایپلی کیشن ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے