بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

14 ذو القعدة 1441ھ- 06 جولائی 2020 ء

دارالافتاء

 

نماز میں سورۃ فاتحہ کے بعد سورت سے پہلے تسمیہ پڑھنا


سوال

نماز میں سورہ  فاتحہ کے بعد سورت سے پہلے تسمیہ پڑھنا چاہیے یا نہیں؟

جواب

نماز میں سورہ فاتحہ کے بعد سورت سے پہلے بسم اللہ پڑھنا مستحب ہے۔

الدر المختار وحاشية ابن عابدين (رد المحتار) – (1 / 490):
"مطلب قراءة البسملة بين الفاتحة والسورة حسن: (قوله: ولاتكره اتفاقاً) ولهذا صرح في الذخيرة والمجتبى بأنه إن سمى بين الفاتحة والسورة المقروءة سراً أو جهراً كان حسناً عند أبي حنيفة، ورجحه المحقق ابن الهمام وتلميذه الحلبي؛ لشبهة الاختلاف في كونها آيةً من كل سورة، بحر".
 فقط واللہ اعلم


فتوی نمبر : 144102200057

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاش

کتب و ابواب

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے نیچے کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔ سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے۔

سوال پوچھیں