بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

- 17 نومبر 2019 ء

دارالافتاء

 

نماز سے پہلے اور نماز کے بعد درود  پاک پڑھنا


سوال

 کیا نماز سے پہلے اور نماز کے بعد درود  پاک پڑھنا چاہیے؟

 

جواب

رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم پر درود شریف پڑھنا نہایت محبوب اور نیک عمل ہے،  بلکہ اس کا حکم خود اللہ تعالیٰ نے قرآنِ مجید میں فرمایا ہے؛  لہذا اگر کوئی شخص التزام اور کسی خاص اجتماعی ہیئت کے بغیر  نماز سے پہلے اور بعد میں  درود شریف پڑھتا ہے تو بلا شبہ اچھا عمل ہے، بشرطیکہ جہراً پڑھنے کی وجہ سے کسی کی نماز میں خلل واقع نہ ہوتا ہو۔ فقط واللہ اعلم


فتوی نمبر : 144012201554

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاشں

کتب و ابواب

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے یہاں کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے

سوال پوچھیں

ہماری ایپلی کیشن ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے