بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

17 ذو القعدة 1441ھ- 09 جولائی 2020 ء

دارالافتاء

 

نمازی کم ہونے کی صورت میں اسپیکر کا استعمال


سوال

 اسپیکر کا استعمال عام نمازوں میں کیسا ہے جن نمازوں میں کم نمازی ہوتے ہیں یعنی 10/20 نمازی ہوں، قراء ت کے لیے اسپیکر کا استعمال کیسا ہے؟

جواب

نماز میں اسپیکر کا استعمال جائز ہے، لیکن بلاضرورت اسپیکر کا استعمال نہیں کرنا چاہیے، اگر نمازی کم ہوں اور اسپیکر کے بغیر بھی انہیں آواز پہنچ جاتی ہو تو  بغیر اسپیکر کے نماز پڑھالینی چاہیے. اگر آواز ضرورت سے اس قدر بلند ہوں کہ دوسروں کی تکلیف کا ذریعہ بنے تو  اس قدر اس کا استعمال جائز نہیں ہوگا۔فقط واللہ اعلم


فتوی نمبر : 144004201306

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاش

کتب و ابواب

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے نیچے کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔ سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے۔

سوال پوچھیں