بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

3 جمادى الاخرى 1441ھ- 29 جنوری 2020 ء

دارالافتاء

 

نبی کے زندہ نہ ہونے کے باوجود انہیں نبی کہنا


سوال

کیا نبی زندہ ہیں؟ اگر نہیں تو پھر ہم اذان میں یہ کیوں کہتے ہیں کہ محمد اللہ کے رسول ہیں، اور نماز میں کیوں کہتے ہیں کہ وہ اللہ کے رسول ہیں جب کہ وہ زندہ ہی نہیں؟

جواب

نبوت ان اوصاف میں سے ہے جو صاحب وصف کی وفات سے زائل نہیں ہوتے ہیں،  جیسا کہ کسی کا باپ ہونا ایسا وصف ہے کہ اس شخص کے مر جانے کے بعد بھی اس کے باپ ہونے کی حیثیت برقرار رہتی ہے۔کلمہ، اذان اور نماز وغیرہ میں نبی کریم صلی اللہ علیہ وسلم کی نبوت کا اقرار  کیا جاتا ہے، جو نبی کریم صلی اللہ علیہ وسلم کی دنیوی وفات کے ساتھ بھی برقرار ہے۔جہاں تک دنیا سے پردہ فرمانے کے بعد کی زندگی کا تعلق ہے تو انبیاء کرام کو اپنی قبور مبارکہ میں حیات حاصل ہے اور یہی اہل سنت والجماعت کا عقیدہ ہے۔


فتوی نمبر : 143610200028

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاشں

کتب و ابواب

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے یہاں کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔ سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے

سوال پوچھیں

ہماری ایپلی کیشن ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے