بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

18 ذو القعدة 1441ھ- 10 جولائی 2020 ء

دارالافتاء

 

مور کھانے کا حکم


سوال

مور حلال ہے یا حرام ؟

جواب

"مور" کا  گوشت کھانا جائز ہے، کیوں کہ  اس میں اصل حلت ہے؛ اللہ عز وجل کا فرمان ہے:

هو الذي خلق لكم ما في الأرض جميعاً
ترجمہ: وہ اللہ جس نے تمہارے  لیے  زمین کی تمام چیزوں کو پیدا کیا۔ [البقرۃ:29 ]

 اور پھر یہ احادیث میں ممنوعہ جانوروں میں بھی شامل نہیں۔  اور نہ اس میں کوئی نقصان اور ضرر ہے، اس لیے "مور" کھانا جائز ہے.فقط واللہ اعلم


فتوی نمبر : 144004200470

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاش

کتب و ابواب

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے نیچے کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔ سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے۔

سوال پوچھیں