بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

- 18 نومبر 2019 ء

دارالافتاء

 

موبائل میں قرآن مجید رکھنا


سوال

کیا قرآنِ مجید کو بصورتِ ایپلیکیشن موبائل میں رکھا جا سکتا ہے؟

جواب

موبائل فون میں قرآنِ کریم رکھنے میں مضائقہ نہیں بشرطیکہ بے ادبی کی نوبت نہ آتی ہو ۔اگر قرآنی اپیلی کیشن موبائل اسکرین پر ڈسپلے ہو تو  اسے بیت الخلاء میں لے جانا ممنوع ہوگا، بصورتِ دیگر گنجائش ہوگی، البتہ نہ بیت الخلاء نہ لے جانا بہترہے؛ تاکہ بے ادبی کا شائبہ بھی نہ ہو۔

نیز  جب موبائل اسکرین پر قرآنِ مجید  کھلا ہو تو  اسے چھونے کے لیے باوضو ہونا ضروری ہے، بلا وضو اسکرین پر ہاتھ لگانا درست نہیں،  اسکرین کے علاوہ موبائل کے دیگر حصوں کو بلاوضو چھوسکتے ہیں۔ فقط واللہ اعلم


فتوی نمبر : 144008200540

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاشں

کتب و ابواب

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے یہاں کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے

سوال پوچھیں

ہماری ایپلی کیشن ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے