بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

- 19 نومبر 2019 ء

دارالافتاء

 

موبائل اسکرین پر اللہ کے نام یا مکہ مدینہ کی تصویر لگانا


سوال

موبائل کی اسکرین پر بیت اللہ یامکہ مدینہ یا اللہ کے نام والی pic تصویر لگانا درست ہے؟

جواب

موبائل کی اسکرین پر اللہ کے نام یا مدینہ ومکہ کی تصویر لگانا درست ہے ،اس شرط کے ساتھ کہ  اللہ کے نام کی بے ادبی نہ ہو،مثلاً موبائل پر اللہ کا نام نظر آرہاہواسے زمین پر رکھ دینا یاپاؤں کے نیچے آنا،یا اسی حالت میں بیت الخلا جانا وغیرہ۔ اور اگر بے ادبی کا احتمال ہو، (مثلاً: یہ معلوم ہو کہ بیت الخلا جانا ہوگا، اور موبائل باہر چھوڑنے کی کوئی صورت نہیں ہے) تو ڈسپلے پر ’’اللہ‘‘  کا نام یا آیت وغیرہ نہ لگائے۔ نیز اس pic میں جان دار کی کوئی تصویر نہ ہو ۔اس لیے کہ جان دار کی تصاویر بنانا یا کیمرہ  یا کسی اور آلہ کے ذریعہ سے محفوظ کرنا شرعاً جائز نہیں۔ فقط واللہ اعلم


فتوی نمبر : 144010200833

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاشں

کتب و ابواب

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے یہاں کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے

سوال پوچھیں

ہماری ایپلی کیشن ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے