بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

11 شوال 1441ھ- 03 جون 2020 ء

دارالافتاء

 

منی کپڑے یا بستر پر لگے تو پاکی کا طریقہ


سوال

منی کپڑے یا بستر پر لگنےکے بعد خشک ہوجائے تو کیا کپڑا یا بستر پاک ہوجاتاہے یا نہیں؟

جواب

منی کپڑے  یا بستر پر لگنے کے بعد خشک ہوجائے تو کپڑا یا بستر پاک نہیں ہوتا، بلکہ  پاک کرنے کے لیے اس ناپاک جگہ کو  اچھی طرح دھوکر نجاست زائل کرنا ضروری ہوگا۔

البناية شرح الهداية - (1 / 712):

"والمني نجس يجب غسله رطباً فإذا جف على الثوب أجزأ فيه الفرك؛ لقوله عَلَيْهِ السَّلَامُ لعائشة - رَضِيَ اللَّهُ عَنْهَا -: «فاغسليه إن كان رطباً وافركيه إن كان يابساً».

و في الشرح: وفي " فتاوى قاضي خان ": الثوب إذا أصابه المني ويبس وفرك يحكم بطهارته في قولهما، وعن أبي حنيفة روايتان، وأظهرهما أن بالفرك فعل النجاسة تجوز الصلاة فيه. وإذا أصابه الماء يعود نجساً في أظهر الروايتين عن أبي حنيفة، وعندهما لايعود نجساً، وعن الفضل أن مني المرأة لايطهر بالفرك؛ لأنه رقيق، وعن محمد: أن المني إذا كان غليظاً فجف يطهر بالفرك، وإن كان رقيقاً لايطهر إلا بالغسل". فقط واللہ اعلم


فتوی نمبر : 144010200838

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاش

کتب و ابواب

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے نیچے کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔ سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے۔

سوال پوچھیں

ہماری ایپلی کیشن ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے