بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

- 13 نومبر 2019 ء

دارالافتاء

 

مخلوط تعلیم گاہوں میں لڑکیوں کو تعلیم دلوانا


سوال

کیا مخلوط نظام تعلیم میں لڑکی کا تعلیم کے لیے جانا جائز ہے؟

جواب

ایسے ادارے جہاں مخلوط تعلیمی نظام رائج ہو وہاں لڑکیوں کو تعلیم دلوانا کئی مفاسد پر مشتمل ہونے کی وجہ سے جائز نہیں، لہذا ایسے اداروں میں تعلیم دلوائی جائے، جہاں مخلوط نظام تعلیم رائج نہ ہو۔تفصیل کے لیے درج ذیل فتوی سے استفادہ کرلیا جائے۔

https://www.banuri.edu.pk/readquestion/مخلوط-تعلیم-4/29-09-2018

فقط واللہ اعلم


فتوی نمبر : 144103200172

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاشں

کتب و ابواب

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے یہاں کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے

سوال پوچھیں

ہماری ایپلی کیشن ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے