بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

15 ذو القعدة 1441ھ- 07 جولائی 2020 ء

دارالافتاء

 

محمد ارحم نام رکھنے کا حکم


سوال

میری بہن کے بیٹے کا نام محمد ارحم ہے، بچہ ایک برس کا ہوچکا ہے، اب بعض لوگ کہہ رہے ہیں کہ یہ نام صحیح نہیں ہے اس کو بدل دو، محمد ہٹا کر صرف ارحم رکھ لو، میری بہن کو یہ نام پسند ہے، وہ بدلنا نہیں چاہتی.

جواب

ارحم کا معنی ہے زیادہ رحم دل، ایک حدیث میں حضرت ابوبکر رضی اللہ عنہ کو ارحم امتی یعنی امت کا سب سے زیادہ رحیم شخص کہا گیا ہے، اور ہمارے ہاں ناموں کی ابتدا میں محمد بطورِ تبرک لگایا جاتا ہے، اس لیے محمد ارحم نام رکھنے میں کوئی شرعی قباحت نہیں. واللہ اعلم


فتوی نمبر : 143712200024

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاش

کتب و ابواب

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے نیچے کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔ سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے۔

سوال پوچھیں