بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

5 شوال 1441ھ- 28 مئی 2020 ء

دارالافتاء

 

قضاء حاجت کے بعد کیا ٹشو استعمال کرنا ضروری ہے؟


سوال

انسان جب بیت الخلا جاتا ہے، جہاں وہ اپنا تقاضا  پورا کرنے کے بعد اپنا عضو پانی سے دھوتا ہے، کیا یہ ٹھیک ہے یا نہیں؟ سوال کا مقصد یہ ہے کہ کیا ٹشو پیپر وغیرہ  استعمال کرنا ضروری ہے؟  یا صرف پانی سے دھولینا کافی ہے؟

جواب

استنجا کا افضل طریقہ یہ ہے کہ پیشاب سے فراغت کا اطمینان ہونے کے بعد مٹی کے پاک ڈھیلے یا ٹشو پیپر سے پیشاب کو خشک کرنے کے بعد پانی سے دھو ڈالے، پاخانہ کے بعد مٹی کے تین ڈھیلوں یا ٹشو پیپر سے پاخانہ کے مقام کو صاف کرنے کے بعد پھر پانی سے دھو لینا چاہیے۔

پیشاب کے قطرات نکلنے کا اطمینان کرنے کے لیے کھنکھار لے، یا قدم پر زور دے یا کھڑے ہوکر ایک آدھ قدم چل لے،  استنجا کرتے وقت عام حالت میں جب پیشاب کے قطرے اپنی جگہ سے پھیلے نہ ہوں تو ٹشو پیپر سےا ستنجا کرنے کے بعد پانی سے استنجا کرنا افضل اور بہتر ہے۔  اگر قطرے کچھ پھیل جائیں تو ٹشو کے استعمال کے بعد پانی سے دھونا ضروری ہے ۔(فتاویٰ عالمگیریہ ص: ۴۸ جلد: ۱، الفصل الثالث فی الاستنجاء)

البتہ ٹشو استعمال کرنا ضروری نہیں،  صرف پانی سے دھو لینا کافی ہے،  تاہم پیشاب کے قطروں کے بند ہوجانے کے بعد دھونا ضروری ہے۔ فقط واللہ اعلم


فتوی نمبر : 144104200691

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاش

کتب و ابواب

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے نیچے کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔ سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے۔

سوال پوچھیں

ہماری ایپلی کیشن ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے