بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

25 جمادى الاخرى 1441ھ- 20 فروری 2020 ء

دارالافتاء

 

قربانی کے بڑے جانور میں پانچ حصے قربانی اور دو حصہ عقیقہ کے لیے ڈالنا


سوال

کیا قربانی کے جانور میں عقیقہ بھی کرسکتے ہیں؟ جیسے کہ بڑے جانور میں 7 حصے ہوتے ہیں  تو کیا اس میں  پانچ حصے قربانی کے اور دو حصے بیٹے کے عقیقہ کے کرسکتے ہیں؟ 

جواب

قربانی کے بڑے جانور  (مثلاً  گائے، بھینس اور اونٹ)میں عقیقہ کی نیت سےحصہ ڈال سکتے ہیں، اس میں شرعاً   کوئی حرج نہیں، لہذا بڑے جانور میں پانچ حصے قربانی اور اور دو حصے بیٹے کے عقیقہ کے ڈالنا جائز ہے، اس سے قربانی اور عقیقہ دونوں ادا  ہوجائیں گے۔

بدائع الصنائع في ترتيب الشرائع (5/ 72):
"(ولنا) أن الجهات - وإن اختلفت صورة - فهي في المعنى واحد؛ لأن المقصود من الكل التقرب إلى الله عز شأنه وكذلك إن أراد بعضهم العقيقة عن ولد ولد له من قبل؛ لأن ذلك جهة التقرب إلى الله تعالى عز شأنه بالشكر على ما أنعم عليه من الولد، كذا ذكر محمد - رحمه الله - في نوادر الضحايا". 
فقط واللہ اعلم


فتوی نمبر : 144010200791

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاشں

کتب و ابواب

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے یہاں کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔ سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے

سوال پوچھیں

ہماری ایپلی کیشن ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے