بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

- 22 نومبر 2019 ء

دارالافتاء

 

قالین پاک کرنے کا طریقہ


سوال

اگر قالین کو زمین پر کسی چیز کے ذریعے چپکادیا جاۓ اور اس پر منی لگ جاۓ تو پاک کرنے کا طریقہ کیا ہوگا؟

جواب

نجاست سے کسی چیز کو پاک کرنے میں اصل نجاست کا ازالہ (زائل کرنا) ہے، اور مختلف اشیاء میں نجاست کے ازالے کے مختلف طریقے فقہاءِ کرام نے لکھے ہیں، نیز جس طرح نجاست کی پاکی پانی سے ہوتی ہے اسی طرح دیگر مائع اشیاء سے بھی اگر نجاست زائل ہوجائے تو اس چیز کی پاکی کا حکم لگایا جاتاہے۔

مذکورہ تمہید ذہن نشین کرنے کے بعد قالین پاک کرنے کا اصل طریقہ تو یہ ہے کہ ناپاک حصہ پر خوب پانی بہا کر قالین کو لٹکا دیا جائے یہاں تک کہ پانی کے قطرے گرنا بند ہوجائیں، اور یہ عمل تین مرتبہ دھرایا  جائے، پس صورتِ مسئولہ میں اگر قالین کو  ہٹاکر مذکورہ طریقے سے پاک کردیا جائے تو زیادہ بہتر یہی ہے۔

البتہ اگر اسے چپکا  دیا گیا ہے اور ہٹانا ممکن نہیں ہے  تو  پھر اسے پاک کرنے کی یہ صورت ہوسکتی ہے کہ کسی مائع کیمیکل/ پیٹرول وغیرہ سے اس ناپاک جگہ کو اتنی مرتبہ اچھی طرح صاف کیا جائے اور خشک کیا جائے کہ نجاست کا زائل ہونا یقینی ہوجائے تو بھی قالین پاک ہوجائے گا۔

اور اگر یہ بھی ممکن نہ ہو تو منی خشگ ہوجانے کے بعد صرف اس حصے کو صاف کردیں، اس صورت میں قالین صاف تو ہوجائے گا، لیکن پاک نہیں ہوگا، اس کے اوپر  پاک مصلی یا کوئی پاک کپڑا بچھا کر نماز ادا کی جاسکتی ہے۔فقط واللہ اعلم


فتوی نمبر : 144008200867

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاشں

کتب و ابواب

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے یہاں کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے

سوال پوچھیں

ہماری ایپلی کیشن ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے