بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

- 16 نومبر 2019 ء

دارالافتاء

 

عورت کے طلاق لینے کی صورت میں مہر کاحکم


سوال

 اگر لڑکی خود سے طلاق لے تو کیا حقِ مہر دینا ضروری ہے؟

جواب

اگرعورت کے مطالبے پر طلاق دی جائے  تو بھی مہر دینا ہوگا، البتہ اگر عورت مہر  کی معافی کے عوض میں خلع یا طلاق لے یا طلاق دینے سے پہلے شوہر  یہ شرط لگائے کہ مہر کے عوض طلاق دوں گا اور عورت اسےمنظور کرلے تو ایسی صورت میں  مہر دینا لازم نہیں ہوگا۔فقط واللہ اعلم


فتوی نمبر : 143908200079

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاشں

کتب و ابواب

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے یہاں کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے

سوال پوچھیں

ہماری ایپلی کیشن ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے