بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

13 شعبان 1441ھ- 07 اپریل 2020 ء

دارالافتاء

 

عورتوں کے لیے ناخن پالش


سوال

اسلام میں عورتوں کے لیے ناخن پالش کا کیا حکم ہے؟

جواب

عورتوں کے لیے ناخن پالش کا استعمال کرنا درست نہیں ؛ کیوں کہ ناخن پالش سے ناخن کا ظاہری حصہ  مستور ہوجاتاہے، اور  وضو  و غسل میں ناخن  تک  پانی پہنچنا ممکن نہیں رہتا ؛ اس لیے  ناخن پالش   وضو  اور غسل سے مانع  ہے ۔البتہ اگر کسی نے لگالی ہو تو اس پر لازم ہے کہ وضو کرنے سے پہلے  اس کو صاف کرے۔فقط واللہ تعالیٰ اعلم


فتوی نمبر : 143908200583

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاشں

کتب و ابواب

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے نیچے کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔ سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے۔

سوال پوچھیں

ہماری ایپلی کیشن ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے