بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

- 25 مئی 2020 ء

دارالافتاء

 

شوال کا روزہ رکھ کر توڑنے کی صورت میں قضا لازم ہے


سوال

ایک شخص نے شوال کے چھے روزے رکھے اور آخری روزہ اس نے توڑ دیا اور مہینہ ختم ہوگیا، آیا وہ ایک روز  کی قضا کرے گا یا نہیں؟  اور اگر کرے گاتو کیا اسے شوال کے روزوں کی فضیلت حاصل ہوگی؟ 

جواب

مذکورہ صورت میں جب آخری روزہ شروع کرکے توڑا ہے تو اس روزے کی قضا واجب ہے، اب اگر کسی واقعی شرعی عذر کی بنا پر  روزہ توڑا ہے تو امید ہے کہ اس روزے کی قضا  پر اسے شوال کے روزے کا ہی اجر ملے گا۔ فقط واللہ اعلم 


فتوی نمبر : 144010200567

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاش

کتب و ابواب

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے نیچے کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔ سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے۔

سوال پوچھیں

ہماری ایپلی کیشن ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے