بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

11 شوال 1441ھ- 03 جون 2020 ء

دارالافتاء

 

شادی کے موقع پر رشتہ داروں کی طرف سے جہیز کی تیاری کے لیے لڑکی کے باپ کو دی جانے والی رقم کس کی ملکیت ہوگی؟


سوال

شادی کے موقع پر لڑکی کے باپ کو دی جانے والی رقم کس کی ملک ہوگی، جب کہ رشتہ دار وغیرہ نے یہ تصریح کی ہو کہ اس رقم سے لڑکی کے لیے جہیز وغیرہ خریدے، حال آں کہ جہیز باپ یا بھائیوں کی طرف سے پہلے سے خریدا جاچکا ہو؟

جواب

اگر رقم دینے والوں نے یہ صراحت کی ہو کہ یہ رقم لڑکی کے لیے جہیز خریدنے کے لیے دی جارہی ہے تو وہ رقم لڑکی کی ملکیت ہوگی۔ فقط واللہ اعلم


فتوی نمبر : 144104200142

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاش

کتب و ابواب

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے نیچے کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔ سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے۔

سوال پوچھیں

ہماری ایپلی کیشن ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے