بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

11 ربیع الاول 1442ھ- 29 اکتوبر 2020 ء

دارالافتاء

 

 سورۃ  قصص آیات ٢۴ کی فضیلت


سوال

 سورۂ  قصص آیات 24 کی فضیلت اور اس آیت  کو پڑھنے سے حاصل ہونے والے فائدہ بتا دیں۔

جواب

سورۂ  قصص آیت نمبر 24 یہ ہے:

{رَبِّ إِنِّي لِما أَنْزَلْتَ إِلَيَّ مِنْ خَيْرٍ فَقِيرٌ}

یہ دعا حضرت موسیٰ علیہ السلام نے اللہ تبارک وتعالیٰ سے مانگی تھی جس وقت فرعون اور اس کے مشیرین نے آپ علیہ السلام کے قتل کا فیصلہ کیا تھا، اور آپ علیہ السلام مصر سے نکل کر مدین پہنچے تھے، اور بزرگِ مدین کی دو صاحب زادیوں کو پانی بھر کر گھر روانہ کرنے کے بعد آپ علیہ السلام درخت کے سایہ میں آئے تھے، اس دعا میں آپ علیہ السلام نے اللہ سبحانہ وتعالیٰ کے حضور اپنی نیاز مندی ظاہر فرمائی تھی کہ اے میرے رب آپ جو بھی خیر میری طرف نازل کریں گے میں اس کا محتاج ہوں۔ چناں چہ اللہ پاک نے بزرگِ مدین کے دل میں آپ علیہ السلام کی امانت و طہارت وغیرہ صفات ڈال دیں، یوں دس سال آپ کو وہاں ٹھکانہ بھی مل گیا اور  اُن ہی صاحب زادی سے عقدِ نکاح بھی ہوگیا۔

اس پس منظر اور تاثیر کو دیکھتے ہوئے بزرگ فرماتے ہیں کہ اگر کسی کی شادی نہ ہو رہی ہو یا اچھا رشتہ دست یاب نہ ہو رہا ہو تو اس کو چاہیے کہ اس آیت کو کثرت سے پڑھے، ان شاء اللہ جلد شادی ہو جائے گی۔ نیز کسی پردیس میں آدمی کو رہائش نہ مل رہی ہو یا اپنے ہی دیس میں رہائش کا مسئلہ ہو تو بھی دل سے یہ دعا کرنے سے امید ہے کہ اللہ پاک رہائش مع زواج کا انتظام فرمادیں گے۔ فقط واللہ اعلم


فتوی نمبر : 144106200470

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاش

کتب و ابواب

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے نیچے کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔ سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے۔

سوال پوچھیں