بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

11 شوال 1441ھ- 03 جون 2020 ء

دارالافتاء

 

دودھ، زیتون یا شہد سے نہانے کا حکم


سوال

دودھ، زیتون، شہد سے نہانا/غسل کرنا شرعی حیثیت سے جائز ہے یا نہیں جب کہ پانی غسل خانے سے گٹرلائن میں جاتا ہے؟

جواب

دودھ، زیتون یا شہد سے نہانا اسراف میں داخل ہے اور گٹر میں جانے کی وجہ سے رزق کی بے حرمتی بھی لازم آتی ہے، اس لیے ان اشیاء سے نہانا جائز نہیں ہے، البتہ مرض کی وجہ سے ایسا کرے اور متبادل دوا نہ ہو تو جائز ہے۔فقط واللہ اعلم


فتوی نمبر : 144010200782

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاش

کتب و ابواب

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے نیچے کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔ سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے۔

سوال پوچھیں

ہماری ایپلی کیشن ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے