بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

16 ذو القعدة 1441ھ- 08 جولائی 2020 ء

دارالافتاء

 

حلال رزق کے حصول اور پریشانیوں اور مصائب کی دوری کے لیے عمل


سوال

میں ورکنگ وویمن ہوں، طلاق یافتہ ہوں، میری ایک بیٹی بھی ہے، میں پانچ سال سے بہت پریشان ہوں؛ کیوں کہ میرا باس بہت بدتمیز آدمی ہے، سب کے سامنے  بدتمیزی کرتا ہے، جتنی بھی محنت کرلو وہ اس کو تسلیم نہیں کرتا۔ براہِ مہربانی کوئی وظیفہ بتائیں کہ اللہ میرے لیے بہتر بندوبست کرلے، اور مجھے سکون اور ایمان والا رزق عطا فرمائے!

جواب

سب سے پہلی بات تو یہ ہے کہ اللہ تعالیٰ کی ذات سے مایوس نہ ہوں، ہر تکلیف و آزمائش اور سہولت وخوشی اللہ تعالیٰ کی طرف سے ہے،  اس لیے پریشانیوں اورمصائب کا حل رجوع الی اللہ ہے، یعنی اللہ تعالیٰ کی طرف متوجہ ہونا، اللہ تعالیٰ کی طرف توبہ و استغفار کے ذریعے بھی متوجہ ہوں اور اپنے مسائل کا حل اللہ تعالیٰ کے حوالے کردیجیے،  اور اللہ تعالیٰ کو اپنے مسائل کے حل کا وکیل بنادیجیے، اللہ تعالیٰ کبھی آپ کا سہارا نہیں چھوڑیں گے۔

نیز اس کے ساتھ  بہت زیادہ شکر کی عادت اپنالیجیے، بسا اوقات ہمیں ظاہر میں یہ محسوس ہوتاہے کہ ہمیں کوئی نعمت حاصل نہیں، اور ہر طرف سے ہم پریشانیوں میں گھرے ہوئے ہیں، جب کہ ہر آن و ہر لحظہ ہم اللہ تعالیٰ کی بے شمار نعمتوں میں ڈوبے ہوئے ہیں، اس لیے ظاہر میں پریشانی ہی کیوں نظر نہ آئے بندے کا کام ہر وقت مالک کا شکر ادا کرنا ہے، اللہ تعالیٰ ضرور اپنے انعامات میں اضافہ فرمائیں گے اور دنیاوی پریشانیاں بھی ان شاء اللہ حل ہوجائیں گی۔ 

بہر حال  اللہ تعالیٰ سے تعلق قائم کرنے اور اسے مضبوط کرنے کی ہر انسان کو ضرورت ہے، اگر نمازوں کی پابندی نہیں ہے تو پنج وقتہ نماز کا اہتمام کیجیے، آپ خود اور اگر بیٹی بھی پڑھ سکتی ہو تو اس سے بھی  سورہ واقعہ اور سورہ طارق فجر اور مغرب کے بعد ایک ایک مرتبہ پڑھنےکا اہتمام کروائیں،  استغفارکی کثرت کریں،   نمازوں کے بعد دعائیں بھی کیجیے اور حسبِ توفیق صدقہ دیا کیجیے۔

جب تک کسی متبادل جگہ ملازمت نہیں مل جاتی بوجہ ضرورت باپردہ رہ کر مذکورہ جگہ پر ملازمت کرسکتی ہیں، اس کے ساتھ  اپنی استطاعت کے مطابق کسی ایسے ادارے یا جگہ ملازمت کی تلاش اور دعا جاری رکھیے جہاں دینی اور باپردہ ماحول ہو؛ تاکہ غیر مرد سے واسطہ ہی نہ پڑے۔

اپنے مسائل کے حل کے لیے درج ذیل اوراد کا اہتمام کیجیے:

1- جس شخص سے نقصان پہنچنے کا اندیشہ ہو، اس سے حفاظت کے لیے درج ذیل دعا کثرت سے پڑھیے:

"اَللّٰهُمَّ إِنَّا نَجْعَلُكَ فِيْ نُحُوْرِهِمْ وَنَعُوْذُبِكَ مِنْ شُرُوْرِهِمْ".

2- ہر مشکل اور پریشانی کے حل کے لیے مندرجہ ذیل تسبیح صبح اورشام سات سات مرتبہ پڑھیں ۔

’’حَسْبِىَ اللَّهُ لاَ إِلَهَ إِلاَّ هُوَ عَلَيْهِ تَوَكَّلْتُ وَهُوَ رَبُّ الْعَرْشِ الْعَظِيمِ‘‘.

حدیث شریف میں ہے جوآدمی صبح اورشام سات سات مرتبہ یہ دعا پڑھے گااللہ تعالیٰ اس کی تمام مشکلات کو حل فرمائیں گے۔(سنن ابی داود)

3- رزق کی وسعت، برکت اور ترقی کے لیے درج ذیل اوراد میں سے کسی ایک کا معمول بنالیجیے:

(1)  فجر  کی نماز کے بعد ستر مرتبہ پابندی سے یہ آیت پڑھا کریں، ان شاءاللہ رزق کی تنگی سے محفوظ رہیں  گے:

 اَللَّهُ لَطِيفٌ بِعِبَادِهِ يَرْزُقُ مَن يَشَاء وَهُوَ الْقَوِيُّ العَزِيزُ ( الشوری: ۱۹)

(2)  ہر نماز کے بعد سات مرتبہ اور چلتے پھرتے درج ذیل دعا کا اہتمام کریں:

"اَللّٰهُمَّ اكْفِنِيْ بِحَلاَلِكَ عَنْ حَرَامِكَ وَ أَغْنِنِيْ بِفَضْلِكَ عَنْ مَنْ سِوَاكَ". فقط واللہ اعلم


فتوی نمبر : 144103200662

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاش

کتب و ابواب

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے نیچے کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔ سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے۔

سوال پوچھیں