بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

7 شوال 1441ھ- 30 مئی 2020 ء

دارالافتاء

 

حالتِ احرام میں عورت کا چہرہ پر ماسک پہننا


سوال

عورت اگر اپنی والدہ کو wheel chair پر عمرہ کرائے اور ساتھ میں پردے کے لیے کیپ(cap) والا نقاب بھی کرے تو وہیل چیئر (wheel chair) چلانے میں مشکل ہو گی۔  کیا یہ رعایت ہو سکتی ہے کہ عورت نقاب کے بجاۓ چہرے پر ماسک (face mask) سے اپنے چہرے کو چھپا لے؟

جواب

صورتِ مسئولہ میں اگر ماسک سے چہرے کو  بارہ گھنٹے سے زیادہ چھپائے رکھا تو دم دینا لازم ہوگا، اور اگر اس سے کم وقت رکھا تو صدقۂ فطر کی مقدار کے برابر صدقہ دینا لازم ہوگا؛ لہذا کوئی ایسی تدبیر اختیار کی جائے جس میں پردہ بھی ہوجائے اور کسی شرعی ممنوع کا ارتکاب بھی  نہ ہو۔

الفقه الإسلامي وأدلته (3/ 599):
"وأجاز الشافعية والحنفية ذلك بوجود حاجز عن الوجه فقالوا: للمرأة أن تسدل على وجهها ثوباً متجافيا عنه بخشبة ونحوها، سواء فعلته لحاجة من حر أو برد أو خوف فتنة ونحوها، أو لغير حاجة، فإن وقعت الخشبة فأصاب الثوب وجهها بغير اختيارها ورفعته في الحال، فلا فدية. وإن كان عمداً وقعت بغير اختيارها فاستدامت، لزمتها الفدية".  
فقط واللہ اعلم


فتوی نمبر : 144103200807

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاش

کتب و ابواب

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے نیچے کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔ سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے۔

سوال پوچھیں

ہماری ایپلی کیشن ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے