بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

- 23 نومبر 2019 ء

دارالافتاء

 

جنگلی کبوتر کے ذریعہ کالی یرقان کا علاج کرنا


سوال

ایک ڈاکٹر صاحب ہیں، انہوں نے کالے یرقان   (Hepatitis-C) کا علاج جنگلی کبوتر کے ذریعہ سے کرنے کا طریقہ بتایا ہے،  سوال یہ ہے کہ کیا اس طریقہ سے علاج کرنے کی اجازت ہوگی یا نہیں؟ کیوں کہ اس طریقہ سے علاج کے نتیجہ میں کبوتر مر جاتا ہے،  اور جب تک علاج مکمل نہ ہوجائے اس وقت تک کبوتر مرتے رہتے ہیں.

جواب

اگر  ہیپاٹائٹس سی یا اس طرح کے موذی اور مہلک امراض کے علاج کے لیے تجربے سے یہ بات ثابت ہو جائے کہ یہ طریقہ، کار آمد ہے اور اس سے مرض واقعی ختم ہو جاتا ہے تو علاج کے لیے یہ طریقہ اختیار کرنے کی گنجائش ہوگی ، البتہ اگر اس کے علاوہ کوئی ایسا طریقہ علاج ہو جس میں کسی جان دار کی جان نہ جاتی ہو اور کوئی شرعی ممانعت بھی نہ ہو تو وہ طریقہ علاج اختیار کیا جائے۔ فقط واللہ اعلم


فتوی نمبر : 144008200820

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاشں

کتب و ابواب

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے یہاں کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے

سوال پوچھیں

ہماری ایپلی کیشن ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے