بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

- 22 نومبر 2019 ء

دارالافتاء

 

جانور کے حرام اجزاء کی فروخت


سوال

جانور کے حرام  اجزاء جیسے (کپورے ،آلہ تناسل)  بیچنا کیساہے ؟

جواب

حلال جانور میں سات چیزیں حرام ہیں جن کا کھانا جائز نہیں ہے، وہ سات چیزیں یہ ہیں:

1۔دمِ مسفوح ، یعنی بہنے والا خون ۔۲۔پیشاب کی جگہ (نر و مادہ کی) ۔۳۔خصیے (فوطے)۔ ۴۔پاخانے کی جگہ۔ ۵۔غدود (سخت گوشت، جو بیماری کی وجہ سے بعض اوقات پیدا ہوتاہے)۔  ۶۔مثانہ (پیشاب کی تھیلی)۔ ۷۔پتہ۔ان اشیاء کی خریدوفروخت بھی جائز نہیں ہے۔

الوجیز فی ایضاح القواعد الفقہیۃ الکلیۃ میں ہے

"كل شيء كره أكله والانتفاع به على وجه من الوجوه فشراؤه وبيعه مكروه، وكل شيء لا بأس بالانتفاع به فلا بأس ببيعه". (1/25) فقط واللہ اعلم


فتوی نمبر : 144012200287

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاشں

کتب و ابواب

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے یہاں کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے

سوال پوچھیں

ہماری ایپلی کیشن ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے