بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

11 شعبان 1441ھ- 05 اپریل 2020 ء

دارالافتاء

 

تشہد میں’’ت‘‘ کو السلام کے ساتھ ملانا


سوال

تشہد میں والطیبات کی "ت" کو السلام کے "س" سے ملائیں گے یا نہیں؟ اس لیے کہ السلام کا ہمزہ وصلی ہے جو درمیان کلام میں گر جاتا ہے،  کیا یہ قاعدہ یہاں بھی چلے گا یا نہیں؟ اور اس کے پڑھنے کا افضل طریقہ کیا ہے؟  عام طور پر یہاں وقف کیا جاتا ہے،  کیا اس سے لوگوں کو منع کرنا چاہیے یا نہیں؟

جواب

"السلام" سے چوں کہ نیا جملہ شروع ہوتا ہے؛ اس لیے اس سے پہلے وقف کرنا بہتر ہے، اور "الطيبات" کی تاء پر وقف کرنے کے بعد "السلام" پڑھتے وقت اس کا ہمزہ بھی پڑھا جائے گا۔

تاہم اگر کسی کو ملاکر پڑھنا ہو تو ہمزہ وصلی ہونے کی وجہ سے"الطيبات" کی "ت" کو "السلام" کے "س" سے ملا کر پڑھا جائے گا۔ خلاصہ یہ ہے کہ دونوں صورتیں ہی جائز ہیں؛ لہذا کسی کو کسی صورت سے منع نہیں کرنا چاہیے۔ فقط واللہ اعلم


فتوی نمبر : 144106200905

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاشں

کتب و ابواب

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے یہاں کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔ سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے

سوال پوچھیں

ہماری ایپلی کیشن ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے