بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

9 شعبان 1441ھ- 03 اپریل 2020 ء

دارالافتاء

 

تراویح کی قضا نہیں


سوال

اگر سفرمیں تراویح کا ٹائم نکل جائے تو کیا ترا ویح کی قضا ہے؟ اور کس طرح ؟

جواب

سفر میں اگر موقع ہوتوتراویح پڑھ لینابہتر ہے ۔ اور اگر موقع نہ ہوتو تراویح کا چھوڑدینابھی جائز ہے۔لہذا اگر سفر میں وقت نہ ملااور کوئی شخص تراویح ادا نہ کرسکا تو وقت ختم ہوجانے کے بعد اب تراویح کی قضا نہیں ہے۔(کفایت المفتی 3/404،دارالاشاعت)فقط واللہ اعلم


فتوی نمبر : 143908201094

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاشں

کتب و ابواب

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے یہاں کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔ سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے

سوال پوچھیں

ہماری ایپلی کیشن ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے