بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

- 22 نومبر 2019 ء

دارالافتاء

 

تجارت کی نیت سے لیے گئے چاولوں کی زکاۃ


سوال

میں ملازمت کرتا ہوں، کچھ دن پہلے میں نے کاروبار کی نیت سے اناج(چاول) خریدا جو کہ ریٹ کم ہونے کی وجہ سے ابھی تک نہ بک سکا، کچھ دن بعد زکاۃ  دینے کی تاریخ آ رہی ہے۔ پوچھنا یہ ہے کہ زکاۃ  کی تاریخ تک اگر اناج نہ بک سکا تو زکاۃ  کا حساب کیا ہو گا؟

جواب

صورتِ مسئولہ میں آپ کی زکاۃ  نکالنے کی تاریخ پر تجارت کی نیت سے لیے گئے ان چاولوں کی زکاۃ بھی ادا کرنا لازم ہوگی، اور اس کی صورت یہ ہوگی کہ زکاۃ  کی ادائیگی کے دن ان چاولوں کی اس شہر میں جو قیمتِ فروخت ہے اس کے حساب سے اس کی ڈھائی فی صد زکاۃ ادا کردیں، آپ نے جس قیمت پر چاول خریدے اس کا اعتبار نہیں ہوگا۔فقط واللہ اعلم


فتوی نمبر : 144007200504

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاشں

کتب و ابواب

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے یہاں کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے

سوال پوچھیں

ہماری ایپلی کیشن ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے