بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

- 14 نومبر 2019 ء

دارالافتاء

 

باتھ روم کی دیوار سے کپڑے کا لگنا


سوال

ایک شخص وسوسہ کا شکار ہے  کہ باتھ روم کی دیوار سے کپڑے لگنے سے کپڑے ناپاک ہوجاتے ہیں، کیاواقعی باتھ روم کی دیوار سے کپڑے لگنے سے کپڑے ناپاک ہوجاتے ہیں ؟ وسوسے سے کیسے بچیں؟

جواب

جب تک باتھ روم کی دیواروں پر یقینی طور پر کوئی نجاست نہ لگی ہوئی ہو اور  کپڑے اس کے ساتھ لگنے سے اس نجاست کا اثر کپڑوں میں نہ آجائے، اس وقت تک کپڑے ہرگز ناپاک نہیں ہوں گے، لہذا کپڑوں کے محض باتھ روم کی دیواروں کے ساتھ لگنے  سے کپڑے ناپاک نہیں ہوتے ۔

وہم اور وسوسے کا سب سے کار گر علاج یہی ہے کہ اس کی طرف بالکل بھی توجہ نہ دی جائے، نیز  وسوسوں کو دور کرنے کے لیے  استعاذہ کے مندرجہ ذیل کلمات بکثرت پڑھتے رہاکریں:

"أعوذ بالله من الشیطان الرجیم".

" أَعُوْذُ بِاللهِ الْعَظِيْمِ وَبِوَجْهِهِ الْكَرِيْمِ وَسُلْطَانِهِ الْقَدِيْمِ مِنَ الشَّيْطَانِ الرَّجِيْمِ".

﴿رَبِّ أَعُوذُ بِكَ مِنْ هَمَزَاتِ الشَّيَاطِينِ ، وَأَعُوذُ بِكَ رَبِّ أَنْ يَحْضُرُونِ﴾ [المؤمنون:97، 98] فقط واللہ اعلم


فتوی نمبر : 144012201561

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاشں

کتب و ابواب

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے یہاں کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے

سوال پوچھیں

ہماری ایپلی کیشن ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے