بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

10 شوال 1441ھ- 02 جون 2020 ء

دارالافتاء

 

ایک سلام سے چار رکعت نفل پڑھنے کا طریقہ


سوال

 ایک نیت کے ساتھ چار رکعت نفل کیسے پڑھنے چاہییں؟ دورکعت کے بعد التحیات میں کہاں تک پڑھنا ہے؟ اور تیسری رکعت میں کہاں سے شروع کرنا ہے؟

جواب

اگر کوئی شخص ایک سلام سے چار رکعت نفل ادا کر رہا ہو تو افضل یہ ہے  کہ قعدہ اولیٰ میں تشہد کے بعد  درود شریف بھی پڑھ لے اور تیسری رکعت کے لیے جب کھڑا ہو تو ثناء اور تعوذ بھی پڑھ لے، لیکن اگر وہ ایسا نہیں کرتا یعنی قعدہ اولیٰ میں صرف تشہد پڑھتاہے اور درود شریف نہیں پڑھتا اور نہ ہی تیسری رکعت میں ثناء و تعوذ پڑھتا ہے تو ایسی صورت میں بھی نماز میں کوئی نقص واقع نہ ہوگا۔ فقط واللہ اعلم


فتوی نمبر : 143909200867

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاش

کتب و ابواب

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے نیچے کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔ سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے۔

سوال پوچھیں

ہماری ایپلی کیشن ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے