بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

14 ذو الحجة 1441ھ- 05 اگست 2020 ء

دارالافتاء

 

اہلِ تشیع کی غیر مذہبی تقریبات میں شرکت کاحکم


سوال

اہلِ تشیع کی مذہبی تقاریب کے علاوہ مثلاً شادی وغیرہ تقریبات میں شرکت کرنا کیسا ہے؟ اگر وہ رشتہ دار ہو یا نہ ہو، دونوں صورتوں میں کیا حکم ہے؟

جواب

عام احوال میں  اہلِ تشیع کے ساتھ  رشتہ دار ہوں یا غیر رشتہ دار (ان کی مذہبی تقریبات سے اجتناب کرتے ہوئے) کھاناکھانا  جائز ہے، البتہ جن شیعہ کے عقائد خراب ہوں اور ان کی غیر مذہبی تقریبات میں شریک ہو کر ان کے ساتھ  کھانا پینا رکھنے میں اپنے عقائد بگڑنے کا اندیشہ ہو  تو  ان کے ساتھ کھانا پینا اور ان کی تقریبات میں شرکت جائز نہیں ہوگی۔ فقط واللہ اعلم


فتوی نمبر : 144107200443

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاش

کتب و ابواب

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے نیچے کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔ سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے۔

سوال پوچھیں