بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

- 17 نومبر 2019 ء

دارالافتاء

 

الٹراساؤنڈ میں بچے کے ابنارمل کی خبر ملنے پر اسقاط کرانا


سوال

 آج کل الٹراساؤنڈ کے ذریعہ پتا چل جاتاہے کہ بچہ نارمل نہیں ہے، ابنارمل ہے،  اس بچے کو ضائع کرسکتے ہیں؟ ایک بچی پیدا ہوئی ہے جس کادماغ بہت کم زور ہے اس کاکیاکیاجائے؟

جواب

الٹراساؤنڈ کی خبر یقینی نہیں ہے، اگر یقینی تسلیم کر بھی لیں تو بھی اللہ تعالیٰ حمل کی بقیہ مدت میں اس کی بیماری کو دور کرنے پر قادر ہے،  اوربالفرض آخر وقت تک بھی بچہ صحیح سالم نہ ہو پھر بھی اس کے اسقاط کی اجازت نہیں؛  کیوں کہ بیمار انسان کو مارناجائز نہیں، ایسی صورت میں  اللہ پاک سے صحت یابی کی دعاکریں اورا س سے اچھی امید رکھیں، اور  اس وجہ سے بچے کا اسقاط نہ کرایا جائے، اگر حمل چار ماہ کا ہوگیا ہو تو پھر تو کسی صورت بھی اس کے اسقاط کی گنجائش نہیں ہے۔اگر بچی پیدا ہوچکی ہے تو اس کا مناسب علاج ومعالجہ کیا جائے۔فقط واللہ اعلم


فتوی نمبر : 144004200472

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاشں

کتب و ابواب

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے یہاں کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے

سوال پوچھیں

ہماری ایپلی کیشن ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے