بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

- 19 نومبر 2019 ء

دارالافتاء

 

خلع کے لیے شوہر کی جانب سے قبول کرنا ضروری ہے


سوال

میں اپنے شوہر سے کورٹ کے ذریعہ خلع لے رہی ہوں،  مگر 2ہ خلع دینے راضی نہیں ہیں تو کیا خلع ہوجائے گی؟

جواب

واضح رہے کہ شرعاً خلع منعقد ہونے کے لیے شوہر کا قبول کرنا ضروری ہوتا ہے، پس اگر شوہر خلع تسلیم نہ کرتا ہو تو شرعاً خلع واقع نہیں ہوتا، نکاح بدستور برقرار رہتا ہے۔

لہذا صورتِ مسئولہ میں اگر خلع لینے کی کوئی معقول وجہ ہے تو اولاً شوہر کو  کسی طرح طلاق یا خلع پر راضی کیا جائے، اگر وہ کسی صورت ماننے کو تیار نہ ہو اور واقعۃً  آپ کے شوہر کی جانب سے آپ پر ظلم و زیادتی کی جارہی ہو اور آپ عدالت میں اسے ثابت کرسکتی ہیں تو خلع کے بجائے تنسیخِ  نکاح کا عدالت سے مطالبہ کرسکتی ہیں۔ فقط واللہ اعلم


فتوی نمبر : 144008200491

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاشں

کتب و ابواب

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے یہاں کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے

سوال پوچھیں

ہماری ایپلی کیشن ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے