بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

15 ذو الحجة 1445ھ 22 جون 2024 ء

دارالافتاء

 

رمیصا نام رکھنا


سوال

رمیصا نام رکھنا اچھا ہے یا نہیں؟

جواب

واضح رہے کہ ’’رمیصاء‘‘ ( "ر" پر پیش ، "م" پر زبر ، اور آخر میں ہمزہ ) صحابیات  رضی اللہ عنہن میں سے ایک صحابیہ   حضرت انس بن مالک رضی اللہ تعالیٰ عنہ کی والدہ ام سلیم کا نام ہے۔ "رمیصا" آخر میں ہمزہ کے بغیر کا تلفظ درست نہیں ہے۔

’’رمیصاء‘‘ نام کے مختلف معانی ہیں، ایک معنی: ستارہ ہے۔ اور دوسرا معنیٰ  "رمص" سے ہے، جس کے معنی اُس سفید چیپڑ (میل کچیل ) کے ہیں جو آنکھ کے کونے میں جمع ہوجاتا ہے۔ پہلے معنیٰ کے اعتبار سے اس نام کے مستحسن ہونے میں کلام نہیں۔   دوسرے معنیٰ کے باوجود بھی مذکورہ نام رکھنے میں کوئی حرج نہیں؛ اس لیے کہ صحابہ کرام وصحابیات  رضی اللہ عنہم وعنہن کے نام میں نسبت اصل ہے اور معنی کی حیثیت ثانوی ہے۔‘‘

لہٰذا " رمیصاء" نام رکھنا درست ہے، اور نام رکھتے ہوئے صحابیہ رضی اللہ عنہا کے نام  کی نسبت ہی ملحوظ ہونی چاہیے۔

المعجم الوسیط میں ہے :

"(الرمص) وسخ أبيض جامد يجتمع في موق العين،(‌الرميصاء) الشعري ‌الرميصاء من نجوم الذراع".

(باب الراء 1 / 372 ط:  دار الدعوۃ)

فقط والله اعلم


فتوی نمبر : 144410101393

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاش

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے نیچے کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔ سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے۔

سوال پوچھیں