بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

20 صفر 1443ھ 28 ستمبر 2021 ء

دارالافتاء

 

سفیر کے لیے چندہ کرنے کے لیے مدرسہ کی گاڑی استعمال کرنے کا حکم


سوال

کیا سفیر کے لیے مدرسہ کی گاڑی سے چندہ کرنا جائز ہے؟

جواب

واضح رہے کہ مدرسہ کی گاڑی یا کوئی بھی چیز صرف مدرسہ کی ضروریات کے لیے استعمال کی جاسکتی ہے؛  لہذا اگر سفیر اس گاڑی کو صرف  مدرسہ کی سفارت اور چندے کے حصول کے لیے ہی استعمال کرے تو مدرسہ کی انتظامیہ کی اجازت  سے  ضابطے کے مطابق مدرسہ  کی گاڑی استعمال کرنے کی گنجائش ہے۔ فقط واللہ اعلم


فتوی نمبر : 144112201366

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاش

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے نیچے کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔ سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے۔

سوال پوچھیں