بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

15 ربیع الثانی 1441ھ- 13 دسمبر 2019 ء

دارالافتاء

 

پیمپر پہن کر نماز پڑھنے کا کیا حکم ہے؟


سوال

 ایک بڑے شخص کو بوجہ مجبوری پیمپر پہنایا گیا ہے، کیا اس کے ساتھ نماز پڑھ سکتا ہے؟ باحوالہ جواب دے کر مشکورہوں۔

جواب

اگر پیمپر پر قدرِ درہم (ہتھیلی کی گہرائی کی مقدار) سے زیادہ نجاست لگی ہو تو اس کے ساتھ نماز پڑھنا شرعاً جائز نہیں ہے؛ البتہ گندگی آنے کی شکایت اتنی زیادہ ہو کہ ایک پیمپر (یا کپڑا) ہٹاتے ہی دوسرا ناپاک ہوجاتا ہو، یا بار بار تبدیل کرنے میں بہت زیادہ مشقت ہو  تو پھر اس حرج کی وجہ سے ناپاک پیمپر کے ساتھ بھی نماز پڑھنے کی گنجائش ہے۔

فتاوی ہندیہ میں ہے:

"مَرِيضٌ تَحْتَهُ ثِيَابٌ نَجِسَةٌ إنْ كَانَ بِحَالٍ لَايُبْسَطُ شَيْءٌ إلَّا وَيَتَنَجَّسُ مِنْ سَاعَتِهِ يُصَلِّي عَلَى حَالِهِ وَكَذَا إذَا لَمْ يَتَنَجَّسْ الثَّانِي لَكِنْ يَلْحَقُهُ زِيَادَةُ مَشَقَّةٍ بِالتَّحْوِيلِ، كَذَا فِي فَتَاوَى قَاضِي خَانْ". (الْبَابُ الرَّابِعَ عَشَرَ فِي صَلَاةِ الْمَرِيضِ، ١ /١٣٧)  فقط واللہ اعلم


فتوی نمبر : 144010201085

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاشں

کتب و ابواب

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے یہاں کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔ سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے

سوال پوچھیں

ہماری ایپلی کیشن ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے