بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

9 ربیع الثانی 1441ھ- 07 دسمبر 2019 ء

دارالافتاء

 

نفلی روزے میں شوہر کا بیوی سے ہم بستر ہونا


سوال

اگر رمضان کے بعد بیوی کا روزہ ہو اور شوہر کا روزہ نہ ہوتو کیاوہ دونوں ہم بستری کرسکتے ہیں؟

جواب

فرض روزہ ہو یا نفل، دونوں صورتوں میں روزے  کی حالت میں میاں بیوی تعلقات قائم نہیں کرسکتے ۔لہذا اگر بیوی کا نفلی روزہ ہو اور شوہر کا روزہ نہ ہواس صورت میں بھی شوہر بیوی سے ہم بستری نہیں کرسکتا، نفلی روزے میں اگر شوہر نے بیوی سے ہم بستری کی تو روزہ ٹوٹ جائے گا، البتہ نفل روزے کی صرف قضا لازم ہوگی،  کفارہ نہیں۔

باقی بیوی کے لیے حکم یہ ہے کہ نفل روزہ شوہر کی اجازت سے یا اسے بتا کررکھے، اگر شوہر کو خواہش وتقاضا ہو تو اس دن نفل روزہ نہ رکھے۔فقط واللہ اعلم


فتوی نمبر : 143909200862

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاشں

کتب و ابواب

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے یہاں کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔ سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے

سوال پوچھیں

ہماری ایپلی کیشن ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے