بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

18 ربیع الثانی 1441ھ- 16 دسمبر 2019 ء

دارالافتاء

 

قیامت کے دن کس نسبت سے پکارا جائے گا؟


سوال

قیامت کے دن انسان کو ماں کے نام سے پکارا جائے گا یا باپ کے نام سے ؟

جواب

 حدیث شریف میں ہے کہ قیامت کے دن لوگوں کو ان کے اور ان کے والد کے نام سے پکارا جائے گا، چناں چہ حضرت ابودرداء رضی اللہ تعالیٰ عنہ سے منقول ہے کہ  رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم نے فرمایا: قیامت کے دن تم کو تمہارے اور تمہارے باپ کے ناموں سے پکارا جائے گا لہذا تم اپنے اچھے نام رکھو۔ [مسنداحمد، سنن ابیداؤد] (مشکاۃ، ص:408)

البتہ حضرت عیسی علیہ الصلوۃ والسلام کو چوں کہ اللہ تعالیٰ نے اپنی قدرت کاملہ سے بغیر والدکے حضرت مریم رضی اللہ عنہا کے بطن مبارک سے پیدافرمایاتھا؛اس لیے انہیں والدہ کی جانب منسوب کرکے عیسیٰ بن مریم پکاراجائے گا۔ اور حضرت آدم علیہ السلام کے نہ والد ہیں نہ والدہ؛ اس لیے ان کا نام پکارتے وقت والدین میں سے کسی کے نام کی ضرورت نہیں ہوگی۔ فقط واللہ اعلم  


فتوی نمبر : 143803200031

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاشں

کتب و ابواب

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے یہاں کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔ سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے

سوال پوچھیں

ہماری ایپلی کیشن ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے